معلومات

شناختی کارڈ کے 13نمبروں کے راز کی حقیقت

ہر شہری کے قومی شناختی کارڈ پر تیرہ ہندسے درج ہوتے ہیں، اِن میں کارڈ ہولڈر سے متعلق اہم معلومات پوشیدہ ہیں لیکن اکثر لوگ اِن معلومات سے ناواقف ہیں۔

شہر و ضلع کا نام اور پتہ تو ہرشناختی کارڈ پر درج ہوتا ہے لیکن کیا آپ کو معلوم ہے کہ صرف تیرہ ہندسوں پر مشتمل شناختی کارڈ نمبر سے بھی شناختی کارڈ ہولڈر کے بارے میں کئی اہم معلومات ملتی ہیں، اکثرلوگوں کو تو بالکل نہیں معلوم ہے۔

شناختی کارڈ نمبر کے ان ہندسوں میں پہلا ہندسہ کسی بھی کارڈ ہولڈرکے صوبے کی نشاندہی کرتا ہے، نمبر ایک سے شروع ہونے والا شناختی کارڈ خیبر پختونخوا سے 2فاٹا، 3 پنجاب جبکہ نمبر 4 سندھ اور 5 بلوچستان کی نمائندگی کرتا ہے۔

تاہم اگر کسی کا شناختی کارڈ نمبر 6 سے شروع ہورہا ہے تو یقیناً وہ اسلام آباد کا رہائشی ہے۔

صوبے کے بعد اگلے 4ہندسے بالترتیب ضلع اور تحصیل کی نشاندہی کرتے ہیں، درمیان میں آنے والے سات ہندسوں کا کوئی مطلب نہیں لیکن آخری نمبر بہت اہم ہے۔

اگر کوئی شناختی کارڈ نمبر جفت اعداد یعنی دو، چار، چھ یا آٹھ پرختم ہورہا ہے تو اس کا مطلب ہوا کہ کارڈ ہولڈر کوئی خاتون ہے جبکہ طاق اعداد یعنی ایک ،تین، پانچ سات یا نو مرد کے لیے مخصوص ہیں۔

Back to top button
Close